امریکی صدر کشمیر پر ثالثی کی پیش کش پر قائم

امریکی صدر کشمیر پر ثالثی کی پیش کش پر قائم

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک بار پھر مسئلہ کشمیر میں ثالثی کی پیشکش کر دی ہے۔وائٹ ہاؤس میں جمعرات کو صحافیوں کے ساتھ گفتگو میں ایک سوال پر امریکی صدر نے مسئلہ کشمیر میں ثالثی کا کردار ادا کرنے کی پیش کش کا اعادہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حل کا انحصار بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی پر ہے۔ امریکی صدر نے وزیر اعظم پاکستان عمران خان اور بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کے ساتھ اپنی ملاقاتوں کا حوالہ دیتے ہوئے دونوں رہنماؤں کو شاندار شخصیات قرار دیا۔ امریکی صدر کا کہنا تھا عمران خان اور نریندر مودی دونوں مسئلہ کشمیر حل کر سکتے ہیں، لیکن اگر وہ چاہتے ہیں کہ اس مسئلے کو حل کرنے میں کوئی ان کی مدد کرے تو میں خوشی سے اس کے لئے تیار ہوں، میں نے دونوں ممالک کے رہنماؤں سے اس سلسلہ میں بات چیت کی تھی۔ امریکی صدر نے کہا کہ یہ ایک طویل عرصے سے جاری رہنے والا مسئلہ ہے اگر میں کرسکا اور اگر دونوں ملکوں نے چاہا تو میں ضرور اس مسئلے کے حل میں ان کی مدد کروں گا۔ اس سے پہلے وزیراعظم پاکستان عمران خان کے دورہ امریکا کے دوران صدر ٹرمپ نے کہا تھا کہ بھارتی وزیر اعظم نریندرمودی نے ان سے مسئلہ کشمیر پر ثالثی کرنے کے لیے کہا تھا۔ امریکی صدر کے اس بیان کے بعد بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو کی طرف سے سخت تنقید کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

تبصرہ کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *