حکومت پاکستان آپ کا علاج نہیں کروا رہی تو آپ ہمارے پاس آجائیں، نوازشریف کو بڑی آفرآگئی

حکومت پاکستان آپ کا علاج نہیں کروا رہی تو آپ ہمارے پاس آجائیں، نوازشریف کو بڑی آفرآگئی

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) اسلام آباد ہائیکورٹ کی جانب سے سابق وزیراعظم نواز شریف کی درخواست ضمانت مسترد ہونے کے بعد رہنما پاکستان پیپلز پارٹی خورشید شاہ نے انہیں سندھ میں علاج کروانے کی دعوت دے دی ہے۔ میڈیا سے گفتگو کرتےہوئے خورشید شاہ نے کہا کہ اللہ تعالی نوازشریف کوصحت دے، نوازشریف کی
مرضی کہاں سےعلاج کرواناچاہتے ہیں۔ پاکستان میں اچھے ڈاکٹرز موجود ہیں ،این آئی سی وی ڈی بہترین ادارہ ہے۔ نوازشریف کراچی آجائیں ہم این آئی سی وی ڈی میں علاج کرواتے ہیں، وہ یہاں سے بہتر ہوکر جائیں تو ہمیں خوشی ہوگی۔خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ نوازشریف کی صحت خراب ہے ان کی ضمانت ہونی چاہئیے، نوازشریف کو کچھ ہوگیا تو اُس کی ذمہ دار حکومت ہوگی۔ یاد رہے کہ اسلام آباد ہائیکورٹ نےسابق وزیراعظم نواز شریف کی طبی بنیادوں پر ضمانت کی درخواست مسترد کر دی۔ عدالت نے درخواست کو ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے خارج کیا۔ عدالت کی جانب سے 9 صفحات پر مشتمل تحریری فیصلہ بھی جاری کیا گیا۔ عدالتی فیصلے میں کہا گیا کہ نوازشریف کوپاکستان علاج معالجے کی سہولیات دستیاب ہیں، یہ کیس غیر معمولی حالات کا نہیں بنتا، نوازشریف کے معاملے میں مخصوص حالات ثابت نہیں ہوئے۔ سپریم کورٹ کے حالیہ فیصلوں کے نتیجے میں ضمانت نہیں دی جا سکتی۔ فیصلے میں کہا گیا کہ نواز شریف کو کوئی ایسی بیماری نہیں ہے جس کا پاکستان میں علاج نہ ہو سکے۔ لہٰذا طبی بنیادوں پر ضمانت نہیں دی جا سکتی، نواز شریفجیل میں ہی رہیں گے۔ فیصلے میں مزید کہا گیا ہےکہ سپرنٹنڈنٹ جیل کے پاس بیمار قیدی کو
اسپتال منتقل کرنےکا اختیار ہے۔ نوازشریف کے کیس میں قانون کے تحت جب ضرورت پڑی اسپتال منتقل کیا گیا۔ اس حوالے سے عدالتی نظیریں موجود ہیں قیدی کا جیل یا اسپتال میں علاج ہو رہا ہو تو قیدی ضمانت کا حق دار نہیں رہتا۔ فیصلے میں کہا گیا کہ نواز شریف نے جب بھی خرابی صحت کی شکایت کی انہیں اسپتال منتقل کیا گیا، ان کو پاکستان میں دستیاب بہترین طبی سہولیات مہیا کی جارہی ہیں، پیش کردہ حقائق کے مطابق نوازشریف کا کیس انتہائی غیر معمولی نوعیت کا نہیں۔ عدالتی فیصلے میں شرجیل میمن سمیت مختلف عدالتی فیصلوں کے حوالہ جات بھی پیش کیے گئے۔

تبصرہ کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *