وہ مچھلی جو سمندر کی سطح پر آجائے تو سمجھا جاتا ہے سونامی یا تباہ کن زلزلہ آنے والا ہے، جانیے یہ بات کہاں سچ ثابت ہوئی. . .

وہ مچھلی جو سمندر کی سطح پر آجائے تو سمجھا جاتا ہے سونامی یا تباہ کن زلزلہ آنے والا ہے، جانیے یہ بات کہاں سچ ثابت ہوئی. . .

ٹوکیو(مانیٹرنگ ڈیسک) جاپان میں گزشتہ 10سالوں میں کئی تباہ کن زلزلے آئے، جن میں سے بعض کی ریکٹرسکیل پر شدت 11تک تھی۔ 2011ءمیں ایسے ہی ایک زلزلے میں 20ہزار سے زائد لوگ لقمہ اجل بن گئے تھے۔ اب ایک بار پھر جاپان میں کسی تباہ کن زلزلے یا سونامی کی پیش گوئی کر
دی گئی ہے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق یہ پیش گوئی جاپانیوں میں ایک مخصوص مچھلی کے متعلق پائی جانے والی روایت کے بل پر کی گئی ہے۔ جاپانیوں کا ماننا ہے کہ سمندر میں پائی جانے والی مچھلی، جس کا نام ’اورفش‘ (Oarfish)ہے، جب سمندر کی سطح پر آ جائے تو زلزلہ یا سونامی آتا ہے۔ یہ مچھلی عام طور پر سمندر کی تہہ میں رہتی ہے اور جاپانیوں کے نزدیک اسی وقت سطح پر آتی ہے جب کوئی تباہی آنی ہو۔ گزشتہ دنوں ایک جاپانی ماہی گیر مچھلیاں پکڑ رہا تھا جب اس کے جال میں ایک اورفش بھی آ گئی۔ اس اورفش کے سطح سمندر پر آنے کی وجہ سے جاپان میں یہ افواہ پھیلی ہوئی ہے کہ آئندہ دنوں میں ملک کو کسی اور بڑے زلزلے یا سونامی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ اس ماہی گیر نے ایک ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر پوسٹ کی ہے۔ ویڈیو میں پکڑی جانے والی یہ عجیب الخلقت مچھلی ایک میز پر رکھی ہوتی ہے۔ ماہی گیر بتاتا ہے کہ اس مچھلی کی لمبائی تین سے چار میٹر کے درمیان ہے۔ماہرین کی مطابق اس مچھلی کی لمبائی گیارہ میٹر تک ہو سکتی ہے تاہم موٹائی میں یہ بہت باریک ہی رہتی ہے۔
جاپان میں اس مچھلی کو سمندر کے دیوتا کی پیغامبر کہا جاتا ہے جو انسانوں کے لیے تباہی کا پیغام لے کر آتی ہے۔ اس سے قبل بھی کئی بار زلزلوں اور سونامی سے قبل ہم نے یہ مچھلیاں پکڑی ہیں، جن کے کچھ دنوں بعد ہی جاپان کے کسی نہ کسی علاقے میں تباہی مچ جاتی تھی۔

تبصرہ کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *