یہ کوئی بری بات نہیں، رشتے اب روبوٹ کے ذریعے، کنوارے لڑکے لڑکیوں کے لیے انتہائی انوکھی سہولت متعارف کروا دی گئی

یہ کوئی بری بات نہیں، رشتے اب روبوٹ کے ذریعے، کنوارے لڑکے لڑکیوں کے لیے انتہائی انوکھی سہولت متعارف کروا دی گئی

ٹوکیو(مانیٹرنگ ڈیسک) جدید ٹیکنالوجی کے ذریعے ہر انسانی مشکل کا حل نکالا جا رہا ہے۔ اب شادی کے سلسلے میں لڑکے لڑکی کو پہلی ملاقات ہونے والی جھجک کا حل بھی ٹیکنالوجی کے ذریعے ڈھونڈ لیا گیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق جاپان میں یہ منفرد سہولت متعارف کروائی گئی ہے جہاں
شادی کے لیے ملنے والے ایسے لڑکے لڑکیاں جو براہ راست گفتگو کرتے ہوئے جھجک محسوس کرتے ہیں وہ مصنوعی ذہانت کے حامل روبوٹس کے ذریعے گفتگو کر سکتے ہیں۔ یہ سہولت ٹوکیو کی ٹیکنالوجی کمپنی کنٹینٹس انوویشن پروگرام ایسوسی ایشن نے متعارف کروائی ہے۔ کمپنی نے ٹوکیو کے ایک ہوٹل میں شادی کے خواہش مند لڑکے لڑکیوں کو بلایا اور انہیں میز کے دونوں طرف آمنے سامنے بٹھا کر دو روبوٹس درمیان میں رکھ دیئے۔ ایک لڑکے کا روبوٹ اور ایک لڑکی کا۔ جب یہ لوگ ہوٹل میں آئے تھے تو ماہرین نے پہلے ان سے ان کی ملازمت، رہن سہن اور دلچسپیوں وغیرہ پر مبنی 50سوالات کے جوابات حاصل کر لیے تھے اور وہ جوابات ان کے روبوٹس میں فیڈ کر دیئے تھے۔ چنانچہ لڑکا لڑکی آمنے سامنے بیٹھے سنتے رہے جبکہ ان روبوٹس ان کے نمائندے بن کر آپس میں ایک دوسرے تعارف کرتے رہے۔یوں لڑکے لڑکی کی باہم گفتگو کیے بغیر ہی ایک دوسرے سے جان پہچان ہو گئی اور دونوں براہ راست گفتگو میں حائل جھجک ختم ہو گئی۔پارٹی میں شریک ایک لڑکی کا کہنا تھا کہ ”یہ واقعی بہت متاثر کن ٹیکنالوجی ہے۔ اگر مجھے براہ راست لڑکے سے بات کرنی پڑتی تو میں بہت
نروس ہوتی اور اس طرح کبھی بات نہیں کر سکتی جیسے میرے روبوٹ نے کی۔ “

تبصرہ کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *